Bewafa sad shayari – urdu sad poetry -sad lines

0
498

تجھے اجاڑ کے ترس نہیں آیا؟

لوگ میری داستان سن کر روتے ہیں

Bewafa sad shayari - urdu sad poetry -sad lines
Bewafa sad shayari – urdu sad poetry -sad lines

کیا قیامت تھا ، تمہارا بے رخی سے دیکھنا

ہم نے دیکھا ، زندگی کو رائیگاں ہوتے ہوئے

اچھا ہوا کہ آپ کی پہچان ہو گئ

اچھا کیا کہ آپ نے اچھا نہیں کیا

جوانی کی موت کس کو پسند ہے

فقط ہم نہ مریں گے تو تم کیسے جیو گے

وہ پھر رو دیئے ہمکو خوش دیکھ کے ۔۔۔

بھیگی پلکوں سے بولے ۔۔۔۔ تم کو تو بددعابھی نہیں لگتی

خود کو سب کچھ سمجھنے والوں  کو

ہم کچھ بھی نہیں سمجھا کرتے

ہم کو تسلیم اپنی کم فہمی

ہم تجھے باوفا سمجھتے رہے

تم شہر میں رہو یا مضافات میں رہو

اوقات بڑی چیز ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اوقات میں

رابطہ ٹوٹ جائے گا ساتھ چھوٹ جائیگا

ہم رہے اگر یونہی مبتلا اناؤں میں

کہیں وفا ہی نہیں تھی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ہر اک سوالی تھا

میرے مزاج کے لوگوں سے شہر خالی تھا

تجھے اجاڑ کے ترس نہیں آیا؟

لوگ میری داستاں سن کر روتے ہیں

آنکھوں میں رہا دل میں اتر کر نہیں دیکھا

آنکھوں میں رہا دل میں اتر کر نہیں دیکھا

کشتی کے مسافر نے سمندر نہیں دیکھا

بے وقت اگر جاؤں گا سب چونک پڑیں گے

اک عمر ہوئی دن میں کبھی گھر نہیں دیکھا

جس دن سے چلا ہوں مری منزل پہ نظر ہے

آنکھوں نے کبھی میل کا پتھر نہیں دیکھا

یہ پھول مجھے کوئی وراثت میں ملے ہیں

تم نے مرا کانٹوں بھرا بستر نہیں دیکھا

یاروں کی محبت کا یقیں کر لیا میں نے

پھولوں میں چھپایا ہوا خنجر نہیں دیکھا

محبوب کا گھر ہو کہ بزرگوں کی زمینیں

جو چھوڑ دیا پھر اسے مڑ کر نہیں دیکھا

خط ایسا لکھا ہے کہ نگینے سے جڑے ہیں

وہ ہاتھ کہ جس نے کوئی زیور نہیں دیکھا

پتھر مجھے کہتا ہے مرا چاہنے والا

میں موم ہوں اس نے مجھے چھو کر نہیں دیکھا

Read  more interesting content :

Bewafa sad poetry – bewafa shayari

urdu yaad poetry – urdu sad poetry