love poetry short-romantic shayari

0
388

تم وہ ہو۔۔۔

تم وہ ہو۔۔۔
جسے دیکھ کے
میرے دل کی خالی ٹہنی پر
پھول گلاب کھل جاتے ہیں
جسے دیکھ کر
مجھے اپنی مرضی کے
سارے موسم مل جاتے ہیں۔۔!

شوخیوں سے ، ناز سے انداز سے
ہم بہک جائینگے تم بہکاو تو ♥️
>>>>>>>>>>>>>

خدا نہ کرے کبھی دور ہونا پڑے تم سے!!

جی نہیں پاتا کوئ جان نکل جانے کے بعد

سنا ہے کچھ لوگ زندگی کو جیا کرتے ہیںں

سنا ہے کچھ لوگ آج بھی خوشیاں بانٹتے ہیں
سنا ہے کچھ لوگوں کے دل میں آج بھی اخلاص پلتا ہے
سنا ہے کچھ لوگ آج بھی کوئی آنکھ نم نہیں دیکھ سکتے
سنا ہے کچھ لوگ آج بھی زخموں کا مرحم بنتے ہیں
اور پتہ ہے !
میں نے صرف سنا ہی نہیں دیکھا بھی ہے….
یہ لوگ میرے آس پاس ہی رہتے ہیں میں ان کو محسوس کرتی ہوں خوشبو کی طرح مجھ میں سمائے ہیں میری آنکھوں کی ٹھنڈک ہیں
میرے اداس وجود میں مسکراہٹوں کی لہر ہیں
اور انہیں دیکھ کر مجھے احساس ہوتا ہے کہ دنیا میں آج بھی بے لوث محبّت زندo ہے
میرا پاک پروردگار ان سب کے لئے ہر دن ہر پل اپنی رحمتوں کے دروازے کھولے رکھے قدم قدم پہ ایک نئی بہار ملے کبھی آنکھیں نم نہ ہوں…..
یہ تو کچھ بھی نہیں ۔۔۔۔
یہ جہاں بھی رہیں جیسے بھی رہیں
میری ایک ایک سانس ان کے لئے ” دعا ” ہے___!

نزدیک اگر تم ہو تو کیسا بھی ہو موسم

محسوس یہ ہوتا ہے بہاروں میں کھڑے ہیں

love poetry short-romantic shayari
love poetry short-romantic shayari

کہہ دیتا ہوں ویسے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ میرا کہنا نہیں بنتا

اس دل علاوہ تیرا رہنا کہیں نہیں بنتا

love poetry short-romantic shayari
love poetry short-romantic shayari

طبیب کیا کریں گامیرا علاج محبت

اک نظر ہی کافی ہے تیرے دیدار کی

love poetry short-romantic shayari
love poetry short-romantic shayari

تم میرے ساتھ بھیگنے کا وعدہ تو کرو

محبتوں کی بارش ہم خود کریں گے

love poetry short-romantic shayari
love poetry short-romantic shayari

تو ملے یا نہ ملے یہ مقدر کی بات ہے

پر سکون بہت ملتا ہے تمہیں اپنا سوچ کر

love poetry short-romantic shayari
love poetry short-romantic shayari

اسے کہو! چوڑیاں لادے مجھے

اسے بتاؤ کلا ئیاں خالی ہیں میری

love poetry short-romantic shayari
love poetry short-romantic shayari

سنا ہے بادشاہ ہیں تمہاری آنکھیں

اک نظر دیکھ کے غلام کیجئے نہ

love poetry short-romantic shayari
love poetry short-romantic shayari

میری آنکھوں میں رہتے ہو
میرے دل میں سماؤ نا

میری آنکھوں میں رہتے ہو
میرے دل میں سماؤ نا
کیوں رہتے ہو جدا مجھ سے
مجھی میں ڈوب جاؤ نا

تمھیں ہم پیار کرتے ہیں
تمھی پہ جاں چھڑکتے ہیں
خفا کیوں ہو رہے ہو تم
چلو اب مان جاؤ نا

نا اب پائل پہنتے ہو
نا اب کاجل لگاتے ہو
کبھی پھر سے سنور کر تم
ہمیں خود کو دکھاؤ نا

چلو اقرار کرتے ہیں
ہمیشہ ہم تمھارے ہیں
چلو یہ بات ہم کو بھی
کبھی کہہ کے دکھاؤ نا

یہ راتیں ہیں بہت ظالم
نا کٹتی ہیں، گزرتی ہیں
انہی راتوں میں میرے سنگ
کبھی دو پل بتاؤ نا…!!!!

پوچھا کسی نے کونسی خوشبو پسّند ہے 😋
میں نے تمہاری سانسوں کا قصہ سنا دیا 😌😍

قطرہ قطرہ میرے حلق کو تر کرتی ہے
میری رگ رگ میں اسکی محبت سفر کرتی ہے
💝💝

محبت رب سے ہو تو سکون دیتی ہے اقبال.🌹

نہ خوف ہوگا جدائی کا نہ خطرہ بے وفائی کا۔ ☝🏻

>>>>>>>>>>>

میں جون سا شاعر ہوں..
تو نظم فریحہ کی….

میں جون سا شاعر ہوں..
تو نظم فریحہ کی….
میں تلخ حقیقت سا…
تو خواب گلی جیسی..
دونوں کے مزاجوں میں
سو رنگ الگ سے ہیں
میں تیز دھوپ موسم
تو ٹھنڈی چھاؤں جیسی
آنکھوں کے کناروں پہ دجلہ ہے رواں ایسے
میں شور مچاتا جل…
تو دھیمی ندی جیسی..
رنگوں کی رنگینی میں ہم دونوں جدا نکلے
میں نیلے گگن جیسا
تو سبز شجر جیسی
دن رات کے چکر میں ہم کیسے بھلا ملتے
میں رات کی تنہائی
تو صبح کرن جیسی
کتنا ہی تفاوت ہو دونوں کے مزاجوں میں
پھر بھی مجھے لگتا ہے
میں تیرا ہوں
تو میری ❤️

>>>>>>>>>>

 

تم وہ ہو
جس کو دیکھ کر

تم وہ ہو
جس کو دیکھ کر
میرے دل کی خالی ٹہنی پر
پھول گلابی کھل جاتے ہیں
جس کو دیکھ کر
مجھ کو اپنی مرضی کے
سارے موسم مل جاتے ہیں
گرمی کیا ہے؟
آپ کا غصہ
اور بہاریں؟
آپ کا ہنسنا
جھیلیں کیا ہیں؟
آپکی آنکھیں
عمدہ کیا ہے؟
آپ کا چہرہ..
خوشبو کیا ہے؟
آپ کی سانسیں
خوشیاں کیا ہیں؟
آپ کا ہونا…!!😍

>>>>>>>>>>>>>

اسے کہنا
محبت یوں بھی ہوتی ہے

اسے کہنا
محبت یوں بھی ہوتی ہے
مہینوں رابطہ نہ ہو
بھلےبرسوں قبل دیکھا ہو
ہم نے ایک دوجے کو
مگر پھر بھی
سلامت ھی یہ رہتی ہے
یہ برگ و بار لاتی ہے
اسے کہنا
مجھے_اس_سے_محبت_ہے
کہ جیسے پھول کا خوشبو سے اک انجان رشتہ ہے
اسے کہنا
محبت میں کبھی وہ پھول بن جائے
کبھی خوشبو وہ بن جائے
اسے کہنا محبت میں
ہے کوئی تیسرا بھی جو
محبت کی وجہ بھی ہے
کہ جس سے پھوٹتے ہیں پیار کے
سارے ہی سرچشمے
اسے کہنا
کہ دنیا میں
نہ جانے کب ملیں گے ہم
مگر روز حشر ہم ساتھ ہوں گے عرش کے نیچے
ہاں اس کے عرش کے نیچے
جو میرا اور تمہارا
اور محبت کا خدا بھی ہے
اسے کہنا… محبت_ھے💞

>>>>>>>>>>>>>>>>

یہ جو دل میں ملال ہے مرشد
سب تمہارا کمال ہے مرشد

یہ جو دل میں ملال ہے مرشد
سب تمہارا کمال ہے مرشد
کچھ دعا ہی کرو مِرے حق میں
زیست مجھ پر وبال ہے مرشد
یہ تو بس یوں ہی آنکھ بھر آئی
ورنہ کس کو ملال ہے مرشد
جیسے جلتا ہوا کوئی صحرا
بس یہی میرا حال ہے مرشد
مجھ سے پتھر کو آئینہ کر دے
تو بہت با کمال ہے مرشد
تم ہی بتلاؤ دیس میں میرے
کیوں محبت کا کال ہے مرشد
شاعری تو عطا ہے مولا کی
کب یہ میرا کمال ہے مرشد
دوسرا کوئی بھی نہیں ایسا
آپ اپنی مثال ہے مرشد
یہ جو تجھ پر عروج آیا ہے
میرا وقتِ زوال ہے مرشد
جو گزارا خوشی خوشی میں نے
اصل میں غم کا سال ہے مرشد ..!!
یہ جو دل میں ملال ہے مرشد
سب تمہارا کمال ہے مرشد

>>>>>>>>>>>>>>

اُسے کہنا
اُسے ہم یاد کرتے ہیں

اُسے کہنا
اُسے ہم یاد کرتے ہیں
اُسے کہنا، ہم آ کر خود اُسے ملتے
مگر مقتل، بدلتے موسموں کے خون میں رنگین ھے
اور ہم
قطار اندر قطار ایسے بہت سے موسموں کے درمیان
تنہا کھڑے ہیں
جانے کب اپنا بلاوہ ہو
کہ ہم میں آج بھی
اک عمر کی وارفتگی اور وحشتوں کا رقص جاری ھے
وہ بازی، جو بساطِ جاں پہ کھیلی تھی
ابھی ہم نے نہ جیتی ہے نہ ہاری ھے
اُسے کہنا کبھی ملنے چلا آئے
کہ اب کی بار شاید
اپنی باری ھے…………!!!!!

Read more interesting content :

Sad ghazals collection

romantic poetry – love poetry

sad love shayari – sad poetry

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here