sad poetry in urdu 2 lines- Bewafa yaad poetry

0
338

بہت دل کرتا ہے ہنسنے کو۔۔۔۔۔

مگر رلا دیتی ہے کمی تمہاری

sad poetry in urdu 2 lines- Bewafa yaad poetry
sad poetry in urdu 2 lines- Bewafa yaad poetry

میں وہاں جاکہ مانگ لاوں گی تجھے رب سے

کوئی بتائے تو قسمت کہ فیصلے کہاں ہوتے

sad poetry in urdu 2 lines- Bewafa yaad poetry
sad poetry in urdu 2 lines- Bewafa yaad poetry

شریکوں نے سوچا تھا کہ بدل جائیں گے انداز ہمارے

دیکھ وہی مردانگی وہی آتش ہے ہمارے خون میں

sad poetry in urdu 2 lines- Bewafa yaad poetry
sad poetry in urdu 2 lines- Bewafa yaad poetry

جانتے ہیں کب ایجاد ہوئے تھے قہقہے

جب ضبط ٹوٹا تھا۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔کسی دیوانے کا

sad poetry in urdu 2 lines- Bewafa yaad poetry
sad poetry in urdu 2 lines- Bewafa yaad poetry

وہ آخری فیصلہ سنا کر۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ہوئے روانہ

میں لاکھ چیخا۔۔۔۔۔۔ جناب علی ۔۔۔ جناب عالی ۔۔۔۔۔۔ جناب عالی

sad poetry in urdu 2 lines- Bewafa yaad poetry
sad poetry in urdu 2 lines- Bewafa yaad poetry

حق تنقید تمہیں ہے مگراس شرط کے ساتھ

جائزہ لیتے رہو ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اپنے بھی گریبانوں کا

sad poetry in urdu 2 lines- Bewafa yaad poetry
sad poetry in urdu 2 lines- Bewafa yaad poetry

چھوڑ کر مجھ کو اب نمازوں پر زور ہے اسکا

نہ جانے کس کو خدا سے مانگ کر برباد کرے گا

sad poetry in urdu 2 lines- Bewafa yaad poetry
sad poetry in urdu 2 lines- Bewafa yaad poetry

آج کہاں ہو تم۔۔۔۔۔۔

میری ایک آہ پر تڑپنے والے

sad poetry in urdu 2 lines- Bewafa yaad poetry
sad poetry in urdu 2 lines- Bewafa yaad poetry

مجھ سے اب لوگ کم ہی ملتے ہیں

یوں بھی  میں ہٹ گیا ہوں منظر سے

sad poetry in urdu 2 lines- Bewafa yaad poetry
sad poetry in urdu 2 lines- Bewafa yaad poetry

تمہارے بارے میں سوچنا چھوڑ دیا ہے

اگر بدعا نکلی تو تم برباد ہو جاؤ گے

sad poetry in urdu 2 lines- Bewafa yaad poetry
sad poetry in urdu 2 lines- Bewafa yaad poetry

میرے لفظوں پہ روٹھنے والے

میری خاموشی پہ جشن منا

sad poetry in urdu 2 lines- Bewafa yaad poetry
sad poetry in urdu 2 lines- Bewafa yaad poetry

👈جس طرح خوشبو… لوگوں کو پھول تک لے جاتی ہے… اسی طرح آپ کا اچھا کردار آپکو اچھے لوگوں تک لے آتا ہے👉

‏ہر بار قصوروار مرد نہیں ہوتا اے بنتِ حوا
کچھ تو قصور تیرے نرم لہجے کا بھی ہے

زندگی ختم ہی نہیں ہوتی

اک مدت سے مر رہے ہیں ہم

یہ دل بھی عجیب ہے کبھی یوں ہنسنے لگ جاتاہے جیسے کوئی غم نہ ہو
اور کبھی یوں اداس ہو جاتا ہے جیسی سارے غم اندر دفن ہو گئے ہو

کوئی پُوچھے تو میں کہتی ہوں ہاں رابطے میں ھے
پر آنکھیں چیخ کے کہتی ھیں، نہیں چھوڑ گیا۔

مر گیا ہے وہ شخص جس پوچھتے ہو آپ

کسی کی یاد نے اس کو زندہ جلا دیا
ﺗﻤﮩﯿﮟ ﯾﮧ ﻓﺨﺮ ﺗﻮ ﺣﺎﺻﻞ ﮨﮯ ﺗﻤﮩﯿﮟ
ﭼﺎﮨﺎ ﮔﯿﺎ
ﮨﻤﺎﺭﮮ ﭘﺎﺱ ﯾﮧ ﺍﺣﺴﺎﺱ ﺑﮭﯽ
ﺍﺩﮬﻮﺭﺍ ﮨﮯ

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here